Ministry of Planning
Development & Reform

Press Release

The 7th meeting of Joint Cooperation Committee on ...

Published : 23 November 2017

The 7th meeting of Joint Cooperation Committee on China Pakistan econ...


7th JCC in Pakistan is a milestone towards realizi...

Published : 23 November 2017

The 7th meeting of Joint Coordination Committee (JCC) of Pakistan Chin...


Entire country is unified on CPEC: Ahsan Iqbal...

Published : 16 November 2017

ISLAMABAD: Minister for Planning and Development, and Interior Ahsan I...


CHAMBERS OF COMMERCE & INDUSTRIES, BUSINESS COMMUN...

Published : 2 November 2017

CHAMBERS OF COMMERCE & INDUSTRIES, BUSINESS COMMUNITY TO DRIVE INDUSTR...


وزارت منصوبہ بندی ، ترقی و اصلاحات کے ڈپٹی چئیرمین سرتاج عزیز نے برطانوی وزیراعظم کے نمائندہ خاص برائے پاکستان و افغانستان اُوون جینکن اور ان کے ہمراہ برطانیہ کے ہائی کمیشنر تھامس ڈریو، ڈیفیڈ برطانیہ کی ڈائریکٹر جنرل کے ساتھ ملاقات کی

Dated : 16 October 2017


ڈپٹی چئیرمین پلاننگ کمیشن سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ پاکستان تمام پڑوسی ممالک کے ساتھ پرامن بقائے باہمی اور مساویانہ تعلقات کا خواہشمند ہے ، پاکستان برطانیہ کے ساتھ دیرینہ تعلقات اور تعلیم، صحت، معیشت سمیت دیگر مختلف شعبوں میں تعلقات کو فروغ دینا چاہتا ہے
اسلام آباد: ( 16 اکتوبر 2017) وزارت منصوبہ بندی ، ترقی و اصلاحات کے ڈپٹی چئیرمین سرتاج عزیز نے برطانوی وزیراعظم کے نمائندہ خاص برائے پاکستان و افغانستان اُوون جینکن اور ان کے ہمراہ برطانیہ کے ہائی کمیشنر تھامس ڈریو، ڈیفیڈ برطانیہ کی ڈائریکٹر جنرل کے ساتھ ملاقات کی ۔ ملاقات میں پاکستان اور برطانیہ کے باہمی تعلقات، دوطرفہ تعاون اور علاقائی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ اس موقع پر سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ پاکستان افغانستان میں قیام امن اور ترقی کے لئے اپنا بھرپور کردار جاری رکھے ہوئے ہے ، پاکستان میں امن اور ترقی کا عمل افغانستان میں قیام امن سے براہ راست جڑا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ضرب عزب اور آپریشن ردالفساد سے پاکستان میں قیام امن کی راہ ہموار ہوئی ہے، پاکستان نے خطے میں امن کے لئے بیش قیمت قربانیاں دیں ۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف کامیاب اقدامات سے معیشت کے استحکام اور سرمایہ کاری کی راہ ہموار ہوئی۔ جبکہ پاک چین اقتصادی راہداری کی بدولت پاکستان میں عالمی سرمایہ کاری کی راہ ہموار ہوئی ۔ انھوں نے کہاکہ کامیاب معاشی حکمت عملی اور بہتر اقتصادی پالیسیوں سے پاکستان نے دس سال کے دوران بلند ترین شرح نمو حاصل کی ، ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور برطانیہ کے درمیان بزنس ٹو بزنس روابط کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ ملاقات میں برطانوی وزیر عظم کے نما ئندہ برائے پاکستان اور افغانستان اُوون جینکن نے کہا کہ برطانیہ پاکستان کے تمام مسائل سے آگاہ ہے ۔ انھوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کے اقدامات اور قربانیاں قابل تعریف ہیں، برطانیہ پاکستان کے ساتھ تمام شعبوں میں تعاون کا فروغ چاہتا ہے ۔