Ministry of Planning
Development & Reform
News Alerts: وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقی احسن اقبال کی وزارت منصوبہ بندی کے افسران اور میڈیا کے نمائندوں ترقیاتی منصوبوں میں شفافیت کے لئے اٹھائے گئے اقدامات اور ان کے نتائج پر گفتگو ---------- ‏وفاقی حکومت نے۲۰۱۳میں پلاننگ کمیشن کو دوبارہ خودمختار حیثیت دی تاکہ پیشہ ورانہ مہارت کےحامل افراد کے ذریعےمنصوبہ بندی کا عمل مؤثربنایا جاسکے ‏ہم نے منصوبہ بندی کے عمل میں شفافیت کو فروغ دیا اور ٹوکن رقم رکھ کر نئے منصوبے بنانے کے عمل کی حوصلہ شکنی کی، احسن اقبال ---------- ‏وزارت منصوبہ بندی کے قابل اور اہل اہلکاروں اور افسران کی محنت کی بدولت ہم اس قابل ہوئے کہ قومی خزانےکے 550 ارب روپےبچا سکے، احسن اقبال ---------- ‏وزارت منصوبہ بندی کی کوششوں کے نتیجے میں نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ائیرپورٹ اور منڈا ڈیم جیسے منصوبوں کو ازسر نو زندہ کیا، احسن اقبال ---------- ‏وزرات منصوبہ بندی نے ماضی کے برعکس سیاسی دباؤ ہر منصوبے بنانے کی بجائے ماہرین کی مشاورت سے قابل عمل منصوبوں کا آغاز کیا، احسن اقبال ---------- ‏وزارت منصوبہ بندی نے ۷۵۲ منصوبوں میں شفافیت اور اخراجات میں توازن رکھ کر۵۵۰ ارب روپے کی بچت کی، احسن اقبال ---------- آج کا دن ہمارے لیے خوشی منانے کا ہے اس وزارت کے افسران اور اہلکاروں کا یہ اعزاز ہے کہ ہم نے اپنی محنت سے 550 ارب کی بچت کی اس رقم کی بچت کو کسی نئے منصوبے میں لگایا جائے گا، احسن اقبال ---------- ہم نے پہلے مکمل طور پر تخمینہ لگایا، انکی فیزیبلٹی رپورٹ بنائی گئی اور پھر فنڈز کی فراہمی کو یقینی بنایا، احسن اقبال ---------- ‏نیلم جہلم پراجیکٹ 80 ارب سے بنایا جانا تھا لیکن غلط منصوبہ بندی اور سیاسی عوامل کی وجہ سے آج اس پر 400 سے شائد ارب لگ رہے ہیں، احسن اقبال ---------- ‏نیلم جہلم منصوبے کے بنیادی حقائق کا تخمینہ ہی نہیں لگایا گیا تھا جسکے سبب اب اتنی بڑی رقم لگ رہی ہے، احسن اقبال ---------- ‏ہمیں این 85 جیسے منصوبے ورثے میں ملے، ہم نے ان کا ازسرنو جائزہ لیا اور منصوبوں کو قابل عمل بنایا، احسن اقبال ---------- ‏لواری ٹنل کے منصوبے ہر بھی تقاریر تو ہر دور میں ہوئی پر فنڈ کسی نے جاری نہیں کیے، احسن اقبال ---------- اسلام آباد ایئرپورٹ کو ایک سفید ہاتھی بنا دیا گیا تھا نہ پانی کا انتظام ہوا نہ رابطہ سڑکیں بنائی گئی نہ ہی بجلی کا بندوبست ہوا، احسن اقبال ---------- رواں سال نیو اسلاآباد ایئرپورٹ پر آپریشن کا آغاز کر دیا جائے گا، احسن اقبال ---------- بلوچستان کی کچی کنال کے لیے فنڈ جاری کیے جس سے صوبے بھر کو پانی کی سہولت میسر ہو جائے گی، احسن اقبال ---------- ‏کرم ٹنگی ڈیم کا منصوبہ بھی کئی سال سے التوا کا شکار تھا، احسن اقبال

Press Release

اسلام آباد میں وفاقی وزیر ا...

Published : 26 May 2017

اسلام آباد میں وفاقی وزیر احسن اقبال ک...


Federal Minister Ahsan Iqbal has said that Pakista...

Published : 19 May 2017

Federal Minister Ahsan Iqbal has said that Pakistan’s economy has re...


Gwadar would become an international smart port c...

Published : 15 May 2017

BEIJING, May 15, 2017: Pakistan and China signed various agreements an...


Ahsan Iqbal has refuted news story titled “CPEC ...

Published : 15 May 2017

Minister for Planning, Development & Reform Professor Ahsan Iqbal has...


Ahsan Iqbal declares 2016 year of productivity, quality and innovation

Dated : 30 November -0001

Federal Minister Planning, Development & Reform Ahsan Iqbal declared 2016 as the year of Productivity, Quality and Innovation. He said that Pakistan needs average 7-8 percent growth rate in next ten years for sustained economic growth to create job opportunities for the growing youth population of the country. We need to maximize growth through productivity gains which is critical to attain competitive edge in the world. Vision-2025 envisages the competitive and knowledge based economy by creating conducive environment for it. Ahsan Iqbal expressed these views while speaking at 31st Annual General Meeting and Conference on “Vision-2025: Effective Strategies for Transformational Growth” organized by Pakistan Institute of Development Economics. Ahsan Iqbal on this occasion provided exhaustive overview of the growth patterns followed in the past and those being executed n present regime. He maintained this is right time to shift the focus from exogenous factors to internal drivers of growth emphasizing on resource mobilization, investment and exports. The growth patterns of the past were non-participatory, which led to regional disparity and social inequality in country, resultantly we had to pay heavy cost in terms of its physical dismemberment and giving birth to socialist tendencies in the society. He noted that Vision-2025, formulated after extensive consultation with the relevant stakeholders and experts of various domains. Vision 2015 addresses all significant areas through an ecosystem aided by seven pillars and grounded on five enablers. Minister particularly laid emphasis on human resource development and informed that the present government is investing heavily in education, health and social sector to repair the fractured social platform due to the ill-conceived policies of the past regimes especially martial laws governments, which diverted the