Ministry of Planning
Development & Reform
News Alerts: وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقی احسن اقبال کی وزارت منصوبہ بندی کے افسران اور میڈیا کے نمائندوں ترقیاتی منصوبوں میں شفافیت کے لئے اٹھائے گئے اقدامات اور ان کے نتائج پر گفتگو ---------- ‏وفاقی حکومت نے۲۰۱۳میں پلاننگ کمیشن کو دوبارہ خودمختار حیثیت دی تاکہ پیشہ ورانہ مہارت کےحامل افراد کے ذریعےمنصوبہ بندی کا عمل مؤثربنایا جاسکے ‏ہم نے منصوبہ بندی کے عمل میں شفافیت کو فروغ دیا اور ٹوکن رقم رکھ کر نئے منصوبے بنانے کے عمل کی حوصلہ شکنی کی، احسن اقبال ---------- ‏وزارت منصوبہ بندی کے قابل اور اہل اہلکاروں اور افسران کی محنت کی بدولت ہم اس قابل ہوئے کہ قومی خزانےکے 550 ارب روپےبچا سکے، احسن اقبال ---------- ‏وزارت منصوبہ بندی کی کوششوں کے نتیجے میں نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ائیرپورٹ اور منڈا ڈیم جیسے منصوبوں کو ازسر نو زندہ کیا، احسن اقبال ---------- ‏وزرات منصوبہ بندی نے ماضی کے برعکس سیاسی دباؤ ہر منصوبے بنانے کی بجائے ماہرین کی مشاورت سے قابل عمل منصوبوں کا آغاز کیا، احسن اقبال ---------- ‏وزارت منصوبہ بندی نے ۷۵۲ منصوبوں میں شفافیت اور اخراجات میں توازن رکھ کر۵۵۰ ارب روپے کی بچت کی، احسن اقبال ---------- آج کا دن ہمارے لیے خوشی منانے کا ہے اس وزارت کے افسران اور اہلکاروں کا یہ اعزاز ہے کہ ہم نے اپنی محنت سے 550 ارب کی بچت کی اس رقم کی بچت کو کسی نئے منصوبے میں لگایا جائے گا، احسن اقبال ---------- ہم نے پہلے مکمل طور پر تخمینہ لگایا، انکی فیزیبلٹی رپورٹ بنائی گئی اور پھر فنڈز کی فراہمی کو یقینی بنایا، احسن اقبال ---------- ‏نیلم جہلم پراجیکٹ 80 ارب سے بنایا جانا تھا لیکن غلط منصوبہ بندی اور سیاسی عوامل کی وجہ سے آج اس پر 400 سے شائد ارب لگ رہے ہیں، احسن اقبال ---------- ‏نیلم جہلم منصوبے کے بنیادی حقائق کا تخمینہ ہی نہیں لگایا گیا تھا جسکے سبب اب اتنی بڑی رقم لگ رہی ہے، احسن اقبال ---------- ‏ہمیں این 85 جیسے منصوبے ورثے میں ملے، ہم نے ان کا ازسرنو جائزہ لیا اور منصوبوں کو قابل عمل بنایا، احسن اقبال ---------- ‏لواری ٹنل کے منصوبے ہر بھی تقاریر تو ہر دور میں ہوئی پر فنڈ کسی نے جاری نہیں کیے، احسن اقبال ---------- اسلام آباد ایئرپورٹ کو ایک سفید ہاتھی بنا دیا گیا تھا نہ پانی کا انتظام ہوا نہ رابطہ سڑکیں بنائی گئی نہ ہی بجلی کا بندوبست ہوا، احسن اقبال ---------- رواں سال نیو اسلاآباد ایئرپورٹ پر آپریشن کا آغاز کر دیا جائے گا، احسن اقبال ---------- بلوچستان کی کچی کنال کے لیے فنڈ جاری کیے جس سے صوبے بھر کو پانی کی سہولت میسر ہو جائے گی، احسن اقبال ---------- ‏کرم ٹنگی ڈیم کا منصوبہ بھی کئی سال سے التوا کا شکار تھا، احسن اقبال


Overview of SDGs

OVERVIEW OF SDGS

At the Sustainable Development Summit on 25 September, 2015, UN Member States adopted the 2030 Agenda for Sustainable Development, which includes a set of 17 Sustainable Development Goals (SDGs) to end poverty, fight inequality and injustice, and tackle climate change by 2030.

he SDGs, otherwise known as the Global Goals, build on the Millennium Development Goals (MDGs), eight anti-poverty targets that the world committed to achieving by 2015. The MDGs, adopted in 2000, aimed at an array of issues that included slashing poverty, hunger, disease, gender inequality, and access to water and sanitation. Enormous progress has been made on the MDGs, showing the value of a unifying agenda underpinned by goals and targets. Despite this success, the indignity of poverty has not been ended for all.

The new Global Goals, and the broader sustainability agenda, go much further than the MDGs, addressing the root causes of poverty and the universal need for development that works for all people.



The government has internalized Sustainable Development Goals (SDGs) as National Goals and this is a major policy shift.